وَبا ہے وَبا کو مٹانا ہے ہم نے

(کامران طارق)

وَبا ہے وَبا کو مٹانا ہے ہم نے
قدم سے قدم بھی ملانا ہے ہم نے
فضا میں چھپا ہے جو دشمن ہمارا
اسے خاک میں تو ملانا ہے ہم نے
اکیلے نہیں یہ سفر ہے سبھی کا
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے

ہمیں ساتھ رہنا ہے اب فاصلے سے
محافظ بنیں گے سبھی حوصلے سے
صفائی ہمارے تو ایمان میں ہے
بتا دو سبھی کو بہت ولولے سے
بچانا ہے خود کو بچانا ہے ہم نے
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے

مسیحائوں کی ہمتوں کو سلامی
یقیں سے بھرے حوصلوں کو سلامی
سبھی اک زباں ہیں سبھی کا ہے نعرہ
ہے احساس کے قافلوں کو سلامی
سبھی ایک جاں ہیں دکھانا ہے ہم نے
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے
کرونا کو مل کے ہرانا ہے ہم نے

Comments are closed.