بلا وجہ نہ نکلا کرو مکاں سے

(ڈاکٹر پرویز اقبال)

بلا وجہ نہ نکلا کرو مکاں سے
پرآشوب وبا ہے ذرا دھیان سے
بڑا موزی ہے یہ کورونا جس نے
رونقیں سب چھین لیں جہاں سے
پہنو ماسک دستانے، ملو دور سے
معذرت کر لوگھر آئے مہمان سے
رشتہ باہمی پھر سے ہو گا استوار
رشتہ امید برقرار رہے دل و جاں سے
تندرستی، سلامتی ہے جو عزیز
کرو احتیاط، جیو شان سے
ظاہر و باطن رکھو اپنا صاف
بچ جاو گے ہر طرح کے زیاں سے
جو کام آو ضرورت مندوں کے
بڑا اجر پاو خالق دو جہاں سے
راضی کرلو رب العالمین کو پرویز
نجات مل جائے گی اس امتحاں سے

Comments are closed.