مجھے آپ سب کی ضرورت پڑ گئی ہے

(نصیر بلوچ)

تہاڈی لوڑ پئے گئی اے
وطن دے واسیاں نوں وی
تے مینوں وی
تعاون لئ تہاڈی لوڑ پئے گئی اے
جے میرا مان رکھو تے
مرے ترلے نوں منو تے
حیاتی کیل کے بیٹھے کرونا نوں تسیں دسو
اسیں تیراں دی بارش وچ
نمازاں نیت لینے آں
اسیں میہاں دی واچھڑ ننگیاں پنڈیاں تے جرنے آں
زمانہ جاندائے سانوں
اسیں ہک قوم ہاں
ایڑّتے نئیں سُتّے عیالی دا
جو کھِلر کے بگھاڑاں دی کسے جونہہ ول نکل جاوے
مری جاوے
مرے ترلے نوں منو تے
اسیں ہک جان ہوجائیے
بحبل اللہ جمیعاً دی مثالی شان ہوجائیے
ثبوت اس گل دا انج دئیے
سماجی فاصلہ رکھیے
کدیں ساڈے سببی جے کوئی ساڈا بھرا مویا
تے فیر اس قتل دے احساس سانوں جین نئیں دینا
تہاڈے واسطے مینوں
تہاڈی لوڑ پئے گئی اے
وطن دے واسطے مینوں
تہاڈی لوڑ پئے گئی اے.
ترجمہ:
مجھے آپ سب کی ضرورت پڑ گئی ہے
مجھے بھی اور وطن کے سب باسیوں کو بھی آپ سب کی ضرورت پڑ گئی ہے
اگر تم میرا مان رکھو اور میری گزارش پرعمل کرو تو مجھے آپ سب کی ایک ضروری کام میں مدد کی ضرورت ہے
زندگی کے گرداگرد گھیرا تنگ کئےکرونا کوباور کراؤ کہ ہم برستے تیروں میں بھی نماز ادا کرنے والی قوم ہیں
ہم تندوتیز طوفانی بارش کواپنے ننگے بدن پرسہنے کی سکت رکھتے ہیں
زمانہ ہمیں جانتا ہے
ہم ایک متحدہ قوم ہیں
ہم کسی خوابیدہ چرواہے کی بھیڑبکریوں کا ریوڑ تو نہیں ہیں
جو منتشر ہوکربھیڑیوں کاشکار ہوجائیں اوراپنی جان سے ہاتھ دھوبیٹھیں
آپ سب میری درخواست پرغور کرو تاکہ ہم ایک متحدہ قوم بن جائیں، یک جان ہوکر بحبل اللہ جمیعاً کی جیتی جاگتی مثال بن جائیں اور اس بات کا ثبوت ہمیں اسطرح دینا ہے کہ
,, ہم آپس میں سماجی فاصلہ رکھیں،،
خدانخواستہ اگر کوئی ہم وطن ہمارے سبب جان سے ہاتھ دھو بیٹھا تواس قتل کا احساس ہمیں جینے نہیں دے گا
مجھے تمہاری ضرورت ہے تمہارے لئے
اور اس وطن کیلیے.

Comments are closed.