وبا

(روبینہ خان)

وہی زمین ، وہی آسمان ہے لوگو
اداس پھر بھی سارا جہان ہے لوگو
وبا کا خوف پھیلا ہوا ہے چاروں طرف
زندگی سمٹ گئی ہے کمروں اور مکانوں تک
یہ کیسے موڑ پر ہم سب کھڑے ہیں
نادیدہ خوف میں جکڑے ہوئے ہیں
وبا کرونا کی بے شک بڑی ہے
لاذم ہےاحتیاط ، کہ مشکل گھڑی ہے
کہاجا رہا ہے کہ گھر پہ رھو
رکھو فا صلہ گر کسی سے ملو
بہت جلد ہم کو خبر یہ ملے گی
وبا یہ ہمارےسروں سے ٹلے گی
ہمیں زندگی پھر سے ملے گی

Comments are closed.