شاہراہِ زندگی

(ذوالفقارعلی خان)

THE ROAD OF LIFE

On this road, called life
You have to take
The good with the bad
Smile with the sad.

On this road, called life
Love what you got
Remember, what you have
Remember, what you had.

On this road, called life
Always remember, never forget
Always forgive,
Do not revenge

On this road, called life
Learn from your mistakes
Things go wrong
Life is iron’s corns, not cakes.

On this road, called life
Remember, the road goes on
Remember, the ride goes on
Life is a bunch of roses and bed of thorns.

On this road, called life
Strive up to the best
Fight against all the odds
In the east and the west.

(ترجمہ)
شاہراہِ زندگی

زندگی کی شاہراہ پر
اچھائی و بُرائی اور ہنسنا و روناساتھ ساتھ چلتا ہے۔

زندگی کی شاہراہ پر
شُکر کیجیئے جو کچھ آپ کو مِلا ہے۔یاد رکھیئے کہ آپ کے پاس کیا ہےاور کیا تھا ؟

زندگی کی شاہراہ پر
یہ بات یاد رکھیئے، کبھی بھی نہ بھولیں۔بدلہ مت لیں بلکہ معاف کیا کریں۔

زندگی کی شاہراہ پر
اپنی غلطیوں سے سیکھا کریں۔غلطیاں ہوتی رہتی ہیں کیونکہ زندگی لوہے کے چھنے ہیں، کیک نہیں۔

زندگی کی شاہراہ پر
زندگی پھولوں کا گُلدستہ بھی ہے اورکانٹوں کا بِستر بھی۔ شاہراہ آگےجاتا دِکھائی دیتا ہےاور سفر بھی جاری رہتا ہے۔

زندگی کی شاہراہ پر
بھر پور ترین ہِمت و کوشش سے، مشرق و مغرب میں تمام آفتوں کے خِلاف لڑیں اور مقابلہ کریں۔

Comments are closed.