کل مہمان کی آمد لگتی تھی لیکن

(قاضی عبدالوہاب قریشی)

مزاحیہ قطعات

ـــــــــــــــــــــــ

کل مہمان کی آمد لگتی تھی لیکن

اب کچھ دال میں کالا ہونا لگتی ہے

پل بھر میں کیسے بدلتی ہیں سوچیں

اب تو ہر اک چھینک کرونا لگتی ہے

ـــــــــــــــــــــــ

پیچھے ہٹ جاؤ میرا شانہ ہے

کیا سمجھتے ہو یہ سرھانہ ہے

” ہاتھ رکھو نہ میرے شانوں پر ”

اس کرونا نے پھیل جانا ہے

Comments are closed.