اے خدا

(ایم اکرام الحق)

***** اے خدا۔۔۔ *****
حق پہ اب برہان ہو جائیں گے کیا اب بھی ہم انسان ہوجائیں گے کیا زندگی میں رونقوں کے اے خدا پھر سے اب سامان ہوجائیں گے کیا مفلسوں کی بھی بچت کے اے خدا اب کے کچھ امکان ہوجائیں گے کیا پوچھتے ہیں لوگ تجھ سے اے خدا ملک سب ویران ہو جائیں گے کیا رونقوں کی زندگی سے اے خدا شہر سب انجان ہوجائیں گے کیا بھوک سے مرنے لگے گر اے خدا آدمی حیوان ہو جائیں گے کیا جھوٹ سچ کے اب ہمارے اے خدا قول سب فرقان ہو جائیں گے کیا حق کی راہوں پر چلے گر اے خدا سلسلے آسان ہو جائیں گے کیا

Comments are closed.