میں خطا کار ہوں مولا کوئی دلیل نہیں

(جنید اکرم)

حمدیہ نظم

میں خطا کار ہوں مولا کوئی دلیل نہیں
میرے خدا میرے جیسا کوئی ذلیل نہیں
تیری ناشکری کی، پر تو نے اور، اور دیا
جہاں میں تجھ سا کوئی دوسرا کفیل نہیں
میں بندگی کی حدوں سے گِرا ہوا بندہ
تو ایسا آقا کہ تیرا کوئی مثیل نہیں
کریم تجھ سا نہ کوئی، نہ تیرے جیسا رحیم
ہے تیری قدرتوں جیسا کوئی قبیل نہیں
نظر نہ آئے جو وائرس، بتائے دنیا کو
میرے خدا سا بڑا اور کوئی جلیل نہیں
جو کود جائے فلک بوس شعلوں میں یکدم
ہے تیرے جیسا کسی کا کوئی خلیل نہیں
یہ کائنات ہے پرتو جنیداکرم کا
تیرے جمال کے ہوتے کوئی جمیل نہیں

Comments are closed.