میرے بچو چھوٹے بچو

(قاسم سہانی)

۔ سرائیکی نظم میڈے بالو ۔

میڈے بالو نکڑے بالو
سوہنڑے بالو میڈ ی منو
گھراچ رہوومنہ لکاوو
ہوکا تھیندے ڈینڑ بلاہے
وڈے چھوٹے ویندی چاہے
جیرھا آپ کوںصاف رکھیندے
صابن نال او ہتھ دھویندے
فوج پولیس دی گال منیدے
پریں کھڑدے حال ونڈیندے
پیسے جمع روز کریندے
مزدوریں دے گھر ونج ڈیندے
وائرس کوں اوماربھجیندے
اللہ اونکوں رنگ چا لیندے
منہ تے چھکا جیرھا ڈیندے
لوکیںدی اوجان بچیندے
اپنی جان کوں وارڈکھیندے
ڈاکٹر اونکوں لوک آکھیندے
اوہوساکوں نت سمجھیندے
جیرھا رب دے درتے ویندے
خالق اوندی مونجھ ٹلیندے
سارے وائرس مار سٹیندے
ہنڑ کرونا ول نہ آوے
ساڈے ڈیس تے پیرنہ پاوے
بالو ایویں کر ڈکھلاوو
ماٗ دھرتی دے لعل بچاو و ۔
ترجمہ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
میرے بچو چھوٹے بچو ، خوبصورت بچو میری بات مانو، اعلان ہورہاہے کوئی خطر ناک بلا آئی ہے، پوری دنیا میں پھیل گئی ہے،جس کو لوگ کرونا کہتے ہیں، بڑوں چھوٹوں کو کھاجاتی ہے، جو بندہ اپنے آپ کوصاف رکھتاہے،صابن سے ہاتھ دھوتاہے،فوج اور پولیس کی بات مانتاہے ،دور کھڑے ہوکر دوستوں کوسلام کرتاہے، پیسے جمع کرتاہے ،مزدوروں کے گھر پہنچاتاہے، اللہ اس کے رزق اورصحت میں برکت دیتاہے ، وائرس کواللہ مار بھگاتاہے ۔جوچہرے پرماسک لگاتاہے ، لوگوں کی جان بچاتاہے، اپنی جان قربان کرتاہے، اس کو لوگ ڈاکٹر کہتے ہیں ،وہی ہم کو سمجھاتاہے، جوبندہ رب کے درپرجاتاہے،رب اس کے غم ٹال دیتاہے اللہ وائرس کوماردیتاہے، یہاں کرنا واپس نہ آئے ، ہمارے دیس میں پائوں نہ رکھے ، بچوایساکچھ کردکھلائو، ماں دھرتی کے سب انسان بچائو ۔

Comments are closed.