ہے جان ہتھیلی پر ، مصروف ہیں خدمت میں

(ایم اکرام الحق)
ہم جان ہیں پاتے کب انسان کو راحت میں مخلوق میں اشرف ہی پایا ہے مصیبت میں ان سب کو سلامی ہے گھر سے جو نکلتے ہیں لوگوں کو بچاتے ہیں اس حال قیامت میں احسان ہے ان سب کا اس دور کے انساں پر ہے جان ہتھیلی پر مصروف ہیں خدمت میں وہ سب تو فرشتے ہیں جو چھوڑ کے اپنوں کو نکلے ہیں گھروں سے اس بپھری ہوئی آفت میں مالک کا دلارا ہے افضل ہے وہی انساں آفت میں جو نکلا ہے مضروب کی چاہت میں توفیق نہ دے مالک تو بات ہے بنتی کب ارفع ہے جو

Comments are closed.