کرونا

(رحمت عزیز چترالی)
کھوار(چترالی)
کورونا لہازیو ھنون جم شکست دوم آوا
نہ کوسوم ݯݩگ بوم نہ دست دوم آوا
کھوخو کھوخو کھوپاوا، فِرش فِرشو اُشتروخاوا
تان اَپاکو،نسکارو ٹیکہ ٹشو یا ہوست دوم آوا
ھیہ لہازیو باریا بو جم آگاہی مہمو بچے
حکومتو تےنم “تخلیقی ریاست” دوم آوا
کوس دوری کی نفکت خلص بیتی شینی
تان نو ژوتی ھیتانتے نست دوم آوا
کیہ څیڅیق کی بار بار نیگیتانی تان ہوستان
ھتیتانتے اشٹوکانوکو جم جم چکست دوم آوا
ڈاکھتار، نرس اوچے اکادمیو خیذمتن بچے
تان وولٹیاری بیٹی ای مرگست دوم آوا
دوچھار بیکو بچے کأ کہ مہ نسوتے ہائے
ھتو منع کوری تان سورو پست دوم آوا
فوج اوچے پولوسوت سولوٹ دیتی عزیزؔ
کرونا کی بغائے ترݩگئیے جم دست دوم آوا

————————–

اردو ترجمہ
شفیق الرحمٰن چترالی
کرونا جیسی مہلک وبائی مرض کو میں اچھی طرح شکست دوں گا ا، اپنے آپ اور دیگر لوگوں کو اس مرض سے بچانے کے لیے نہ میں کسی سے ہاتھ ملاوں گا اور نہ کسی سے گلے ملوں گا

مجھے کھانسی آئے یا چھینک آئے تو کھانستے اور چھینکتے وقت احتیاطی تدابیر کے طور پر میں اپنے منھ اور ناک پر ہاتھ، رومال اور ٹشو پیپر رکھوں گا

اس موزی اور مہلک بیماری کے بارے میں بھرپور عوامی آگاہی مہم چلاکرعوام میں شعور بیدار کرنے پرمیں حکومت پاکستان کو تخلیقی زہن والی ریاست کا نام دے رہا ہوں

کورونا کی وجہ سے لاک ڈاون ہونے پر جن جن لوگوں کے گھروں میں راشن ختم ہوگیا ہے میں خود کم کہاوں گا بلکہ ان کو پہلے راش فراہم کروں گا

جو بچے اس بیماری سے بچنے کےلیے باربار اپنے ہاتھوں کو دھورہے ہیں ان کے لیے سمندر سے چن چن کر خوبصورت سیپیان بطور تحفہ لاوں گا

ڈاکٹر، نرس اور اکادمی ادبیات پاکستان کرونا سے بچاو کے لیے جو خدمات انجام دے رہے ہیں ان کو میں اپنی طرف سے مرگست کے پھولوں کا گلدستہ پیش کروں گا

جو لوگ گلے ملنے کیے لئے میرے قریب آئیں ان کو احترام کے ساتھ منع کرکے ہاتھ ملانے کی بجائے ہاتھ سینے میں رکھ کر بطور تعظیم اپنا سر خم کروں گا

پاک فوج اور پولیس کی کرونا وائرس کو شکست دینے کے سلسلے میں خدمات کے لیئے رحمت عزیز ان کو سیلوٹ پیش کرتا ہے اور جب یہ مہلک بیماری پاکستان سے ختم ہوگی تو میں پرتپاک انداز میں اپنے ان سپاہیوں سے ہاتھ بھی ملاوں گا

Comments are closed.