کرونا وبا

(زاہدہ تنہا)

،، د کرونا وبا ،،

,, التجا ،،

ويم اللہ اللہ اللہ چہ لہ دردہ شم بد حالہ
کړم ، توبہ مي کړي قبولہ يا رب ذوالجلالہ

صدقہ د خپل حبيب را مغفرت مونګ تہ
نصيب کړہ
أمتي دخوګ محبوب ستا، بخونکي تہ ہر چا لہ
دا کمزوري بنداګان دي، شي خطا سم ماشومان دي
د اوويا ميندو ستا مينہ، تہ مہر تر مہرو بالہ
خطاکار يم ګنہګار يم پروت پہ در دي کرديګار يم
ډير ناتوان ډير مختورن يم،تہ خبر ي لہ اخوالہ
زندګي مو بندګي کړي ربہ مونګ پہ دي بندي کړي
بس يو تہ رانہ راضي شہ، دلبري بہ راشي مالہ
د وبا شپہ تہ صبا کړى خدايا کل عالم رنړا کړى
دکعبي د حرم لاري ټولي بيرتہ کړي
دعاءلہ،
امين،، زاہدہ تنہا…
———————————

کرونا وبا ،، تر جمہ
آلتجا
کہون اللہ اللہ اللہ ترپ جاتے ہين درد سے ہم،، سبہى کرتے ہين ہم توبہ کر توقبول يا رب!! صدقے مين اپنے حبيب کے ہمين مغافى عطا کر تو،،ہم امتى ہين تيرے مہبوب کے تو بخش دينے والا ہے ہر کسى کا!! آےرب تيرے بندے اتنے کمزور ايسے نادان جيسے ماصوم بچے کرتے ہين خطا،،ليکن تو ہے رحمان ستر مآون سے زيادہ پيار کرنے والا مہروبان!! ليے شرمندګى اپنى اور اپنے کالے چہرے لاين ہين تيرے در يے ہم،،ہين ګنہګارہم زيادہ تيرے سوانہين کوي تو ہے مغبود ہمارا!! آے کل عالم کے خالق اس وبا کى شب مټا دين تودعاء کے حق عطا دي،،حرم کعبى کے رونقين ہمين پہر سے تو لوټا دين ګلى کوچے پہر سجادين!!ہمارى زندګى کو بندګى کر تو ميرےمولاہمارى رہبرى کر نو،،رہے تو ہم سب سے راضى ہمين وہ عشق توسکلا دين! امين، زاہدہ تنہا

Comments are closed.