اس دھرتی پہ پہلے بھی وبائیں آئیں

(ندیم افضل ندیم)

ایہہ دھرتی وبا دا نشانا رہی اے
کہ لگے سزا دا نشانا رہی اے

کدی ہیضا خسرا تے طاعون آئے
کدی ایڈز آ کے تے بندے ڈرائے

کدے ابنِ آدم نے ہمت نہ ہاری
وباواں تھیں لڑنے دی رکھی تیاری

سدا ای وباواں نوں دتیاں نے ماتاں
بشردے علم دیاں کیا ای نے باتاں

کرونا بیماری جو جگ تے ہے آئی
بڑی اس نے اپنی ہے دہشت ودھائی

ذرا وی نہ اس توں جےڈرنا اے یارو
جو دسیا طبیباں اوہ کرنا اے یارو

گھرو گھرای بہنا بس اس دا اپا اے
اے ملنے ملانے تھیں ودھدی وبا اے

بھلے ساڈے نوں آئیاں فوجاں تے پلساں
پئے کر دے ڈیوٹی نے ڈاکٹر تے نرساں

وبائی دناں وچ نہ جنہوں آرام ایں
ہر اُس محکمے نوں تے میرا سلام ایں

ہے جو ہسپتالاں چہ ڈاکٹر وچارے
کسے دیاں دھیاں تے پتر نے پیارے

جنہاں نوں اسیں ہتھ وی لانا نہیں چاہندے
اوہناں نوں ایہہ ڈاکٹر پئے ٹیکے نے لاندے

اے انسانیت نوں بچاؤندے پئے نے
جو خود جاگ سانوں سواؤندے پئے نے

تے محنت انہاں دی نوں پھل لگ کے رہنا
اسیں زندہ باد اے طبیباں نوں کہنا

حکومت دے حکماں دی تعمیل کرنا
تے ویکھیں توں افضل کرونا نے ہرنا
—————-
مفہوم اردو
اس دھرتی پہ پہلے بھی وبائیں آئیں
اس دھرتی پہ بسنے والوں کو وباؤں نے بہت تکلیف دی
کبھی ہیضہ خسرہ طاعون اور ایڈز جیسی بیماریاں آئیں کبھی بھی انسان نے ہمت نہیں ہاری
ان بیماریوں سے ہمیشہ لڑا اور آخر کار انسان نے ان پہ قابو پا لیا
اب اس کرونا نامی وائرس نے دنیا میں اپنی بہت دہشت پھیلائی ہے
اس سے ڈرنے کی ضرورت نہیں بلکہ جو احتیاط بتائے گئے ہیں وہ کریں
یہ ایک دوسرے انسان کے آپس میں ملنے سے پھیلتی ہے آپ لوگ گھروں میں بیھٹیں
افواجِ پاکستان، پولیس، ڈاکٹرز ، نرسز اپنے اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں
وبا کے ان دنوں جو بھی ادارہ کام کر رہا ہے میں اُسے سلام پیش کرتا ہوں
ہسپتال کا عملہ بھی تو آخر کسی کی پیاری اولاد ہے
جن مریضوں کو ہم ہاتھ بھی نہیں لگانا چاہتے
وہ انسانیت کی خاطر ان کا علاج کر رہے ہیں
ڈاکٹرز ہمارے پیاروں کی خاطر دن رات اپنے فرائض
ادا کر رہے ہیں تا کہ ہمیں خوشی ہو
ان کی محنت اور علاج سے مریض صحت یاب ہوں گے
اور ہم انہیں پھر کہیں جیتے رہو خوش رہو
دوستو اس وقت آپ حکومت کی طرف سے ملنے والی ہدایات پر عمل کریں
ندیم افضل کو یقین ہے پھر دیکھنا یہ کرونا وائرس نہیں رہے گا

Comments are closed.