سب جنگ لڑیں

(ذوالفقارعلی خان)
سب جنگ لڑیں
سب جنگ لڑیں سب جنگ لڑیں
اِنساں بنکر، اِک قوم بنکر،گھر پر رہ کر، الگ ہو کر
صفائی کو اِختیار کریں،کرونا سے ہرگز نہ ڈریں
اِحتیاطی تدابیر کو غور سے پڑھیں عمل کریں
سب جنگ لڑیں سب جنگ لڑیں

ہم اللہ کے بندے سارے، مضبوط ایمان ہمارا ہے
ہم اِک منزل کے ہیں راہی، ہم کو یہ جیون پیارا ہے
وباء کو پیروں کے تلے بس روند چلیں بس روند چلیں
نہ جُھکنا ہے نہ رُکنا ہے آگے بڑھیں آگے بڑھیں
سب جنگ لڑیں سب جنگ لڑیں

ہم طوفانوں کے پالے ہیں، ہم زیست کے رکھوالے ہیں
مانا کہ ہیں تاریکیاں، پر اِس کے بعد اُجالے ہیں
اِنسانیت بچانی ہے، اِنسانوں کو بچانا ہے
ہم پاکستانی لوگوں کا، جوش اور جذبہ توانا ہے
مایوس نہ ہوں، نماز پڑھیں، قرآن پڑھیں
سب جنگ لڑیں سب جنگ لڑیں

پریشاں اور بے چین نہ ہوں، سکون سے رہیں، شاد رہیں
بچوں سے کھیلیں ہنسی خوشی، ہر فِکر سے آزاد رہیں
آزمائش کے یہ گِنتی کے دِن پھر خُدا نہ لائے کبھی
وباؤں سے، بلاؤں سے، محفوظ رکھیں ، مولا سبھی
سب جنگ لڑیں سب جنگ لڑیں

Comments are closed.