موت نے دامن کھول دیا ہے

(کرنل سید مقبول حسین)

موت نے دامن کھول دیا ہے
بھوک نے سب کو رول دیا ہے
سب ہمارا دوش ہے یا رب
جو گناہوں کا مول دیا ہے
حشر کی معمولی سی جھلک ہے
غیض کا روزن کھول دیا ہے
تیرے ہی مولا بندے ہیں ہم
بایئں پلڑے میں تول دیا ہے?
توبہ توبہ ہے سب کی زباں پر
سب سے ہے اعلی۱ بول دیا ہے

Comments are closed.