فاصلہ ضروری ہے

(نذر عابد)

دورِ پرفتن اندر
قربتوں کی خواہش کو
اب سُلا دیا جائے
اور خو د کو چپکے سے
مصلحت کی چادر میں
بس چھپا لیا جائے
خود کو خود سے خلوت میں
پھر ملا دیا جائے
دل کے سارے رشتوں میں
عارضی تعطّل ہی
دائمی رفاقت کی
مستقل ضمانت ہے
ہم نے دھیان رکھنا ہے
ہجرتوں کے موسم میں
حوصلہ ضروری ہے
قربتوں کی منزل تک
پہنچنے کی خاطر اب
فاصلہ ضروری ہے

Comments are closed.