کوئی صورت نظر نہیں آتی

( قاضؔی عبدالوہاب قریشی )

قطعات

—————————–

کوئی صورت نظر نہیں آتی
کوئی مُورت نظر نہیں آتی
اب تو باہر نکلنے کی ہم کو
کچھ ضرورت نظر نہیں آتی

————–

ساری دنیا ہو گئی ہے لاک ڈاؤن

یہ کرونا ہے بھی مُوذی وائرس

کب سے یہ کشمیر بھی ہے لاک ڈاؤن

ایک یہ انڈیا کا مُوذی وائرس

Comments are closed.