التجا

(محمد ہادی ہمدانی)

وبا کے کوچے میں جانے والے شریف لوگو!
خدا کی خاطر کہاں چلے ہو؟

تمہیں قسم ہے ہمارے رب کی

گھروں میں کچھ دن ٹھہر کے بیٹھو
وبا سے بچنے کی رہ یہی ہے
وبا سے لڑنے کی رہ یہی ہے

خدا کی بستی نہ بچ سکے گی اگر عبادت کے نام پہ ہم وبا کے سِکے نئے کریں گے!

گھروں میں کچھ دن دعائیں مانگو
وہیں پہ قائم نماز کر لو
وہیں پہ نعتوں کو لب پہ لاو
گھروں میں پرسے کو بیٹھ جاو

خدا گواہ ہے کہ گھر سے باہر جو ان دنوں میں عبادتیں ہیں
ریاضتیں ہیں
وہ عرش والے کے سب حسابوں میں عیب بن کہ لکھی گئی ہیں

خدا کی خاطر امان پاو
خدا کی خاطر امان بانٹو
گھروں میں کچھ دن سنبھل کے ٹھہرو

ہر ایک محفل بنی رہے گی
ہر ایک بستی بچی رہے گی
جو اپنی صبحیں گھروں میں ہوں گی

جو اپنی شامیں گھروں میں گزریں تو سارے موسم بہار ہوں گے
ہر ایک شاخہ ہرا رہے گا
ہر ایک غنچہ کِھلا رہے گا

Comments are closed.