پاکستان اکیڈمی آف لیٹرز اور برازیل اکیڈمی آف لیٹرز کے مابین ادبی تعاون پر مکالمہ

سیاست تجارت اور دفاع کے بعد پاکستان اور برازیل ادبی تعلقات میں بھی بہت جلد باضابطہ طور پر متحد ہو رہے ہیں ۔ ڈاکٹر یوسف خشک

علامہ اقبال ، شاہ لطیف ، رحمان بابا، سلطان باہو اور بلھے شاہ کی سرزمین کے ساتھ مشترکہ ادبی اقدام پر میرا دل بہت خوشی محسوس کررہا ہے۔۔” ڈاکٹر مارکو لوسچی

برازیل اور پاکستانی ادبا کے وفود کے دوروں کے سلسلے میں ہر ممکن سہولت فراہم کی جائیگی ۔ احمد حسین دایو ایمبیسڈر

اسلام آباد(پ۔ر)پاکستان اور برازیل کے مصنفین کے لئےيہ خوش آئند بات ہے کہ سیاست ، اقتصادیات ، تجارت اور دفاع میں ہماری سنہری دوستی کے ساتھ ساتھ اب ہم ادبی تعلقات میں بھی باضابطہ طور پر متحد ہورہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر یوسف خشک میریٹوریس پروفیسر چیئرمین اکادمی ادبیات پاکستان نے “پاکستان اکیڈمی آف لیٹرز اور برازیل اکیڈمی آف لیٹرز “کے مابین ادبی تعاون پر مکالمہ، کے دوران اپنے خطاب میں کیا۔ یہ مکالمہ 21 جون 2021 کو اکادمی ادبیات اسلام اباد میں منعقدہوا۔

اس موقع پر برازیل اکیڈمی آف لیٹرز کے صدر ڈاکٹر مارکو لوسچی کے ساتھ برازیل میں پاکستان کے سفیر ڈاکٹر احمد حسین دایو بھی اپنے قیمتی تاثرات کے ساتھ اس مکالمہ میں شریک ہوئے۔

برازیلین اکیڈمی آف لیٹرز کے صدر ، ڈاکٹر مارکو لوسچی نے کہا ، “علامہ اقبال ، شاہ لطیف ، رحمان بابا ، سلطان باہو اور بلھے شاہ کی سرزمین کے ساتھ اس مشترکہ ادبی اقدام پر میرا دل بہت خوشی محسوس کر رہاہے۔ انہوں نے اکادمی کے ساتھ باہمی مفاہمتی یادداشت پر دستخط کرنے میں بھی دلچسپی ظاہر کی تاکہ پاکستان اکیڈمی آف لیٹرز کے باہمی مشوروں سے قیمتی ادبی منصوبے شروع کیے جاسکیں۔

برازیل میں سفیر پاکستان ڈاکٹر احمد حسین دایو نے اظہار خیال کرتےہوئے کہا کہ اس مشترکہ کاوش سے دونوں ممالک کے مصنفین کے رابطے قائم کرنے کے سلسلے میں دور رس نتائج برآمد ہوں گے۔ برازیل اور پاکستانی ادبا کے وفود کے دوروں کے سلسلے میں ہر ممکن سہولت فراہم کی جائیگی ۔ ان ادبی امور میں مکمل تعاون کو یقینی بنایا جائے گا۔ اس موقع پر ڈاکٹر خشک نےکہا کہ میں پختہ یقین رکھتا ہوں کہ صرف ادب ہی ایک بہترین اور قابل عمل فورم ہے جہاں ہم لوگوں سے لوگوں کے دلی روابط کو فروغ دے سکتے ہیں اور جہاں ہم حقیقی دوستی کے پودوں کو پروان چڑھا سکتے ہیں۔


کیپشن:۔”اکادمی ادبیات پاکستان اور برازیل اکیڈمی آف لیٹرز “کے مابین ادبی تعاون پر مکالمہ، کے دوران برازیل میں پاکستان کے سفیر ڈاکٹر احمد حسین دایو،ڈاکٹر یوسف خشک، چیئرمین اکادمی، برازیلین اکیڈمی آف لیٹرز کے صدر ، ڈاکٹر مارکو لوسچی، گفتگو کر رہے ہیں۔

PAKISTAN ACADEMY OF LETTERS

PRESS RELEASE

“Pakistan and Brazil after golden friendship in politics, economics, trade and defense; are formally being united in literary ties as well” Dr Yousuf Khushk.

“My heart feels very happy with this literary joint initiative with the land of Allama Iqbal, Sultan Baho, Shah Latif, Rehman Baba and Bulleh Shah” Dr. Marco Luccheci.

“I ensure full cooperation regarding the reciprocal visits of writers and poets between Pakistan and Brazil”, H.E Dr. Ahmad Hussain Dayo.

Islamabad (P.R). “It is a joyful moment for the writers of Pakistan and Brazil that like our golden friendship in politics, economics, trade and defense; we are formally being united in literary ties as well” these views were expressed by Dr Yousuf Khushk, Meritorious Professor, Chairman, PAL in his address during “A Dialogue on Literary Cooperation between Pakistan Academy of Letters (PAL) and Brazilian Academy of Letters organized by PAL on 21 June, 2021.

H.E Dr. Ahmad Hussain Dayo, Ambassador of Pakistan in Brazil and Dr. Marco Luccheci, President of the Brazilian Academy of Letters also joined with their valuable remarks on this occassion.

“My heart feels very happy with this literary joint initiative with the land of Allama Iqbal, Sultan Baho, Shah Latif, Rehman Baba and Bulleh Shah” said by Dr. Marco Luccheci, President Brazilian Academy of Letters. He also showed interest in the signing of MoU with the PAL so that valuable literary projects may be started with mutual consultations of Pakistan Academy of Letters.

H.E Dr. Ahmad Hussain Dayo, Ambassador of Pakistan in Brazil said that this joint venture endeavor will definitely bring far reaching results in developing writer to writer contact of both the countries and ensured his full cooperation regarding MoU signing and in other literary matters. He also ensured full cooperation regarding the reciprocal visits of writers and poets between Pakistan and Brazil.

On this occasion, Dr Yousuf Khushk, Meritorious Professor, Chairman, PAL said that I firmly believe that only literature is an excellent and viable forum where we can promote people-to-people contacts and where we can grow the plants of true friendship.

Comments are closed.