اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام معروف مورخ، ماہر لسانیات، محقق، ماہر تعلیم اور دانشور ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ کی 10ویں برسی کے مناسبت سے آن لائن ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ بین الاقوامی ادبی سیمینار کا انعقاد

ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کی ادب و ثقافت کے فروغ کے لیے خدمات ناقابل فراموش ہے۔ مظہر الحق صدیقی

ڈاکٹر نبی بخش بلوچ برصغیر کے سب سے بڑے دانشور تھے۔ پروفیسر فتح محمد ملک

ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے علمی اور تحقیقی خدمات پر عالمگیر شہرت پائی۔ چیئرمین اکادمی

اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام معروف مورخ، ماہر لسانیات، محقق، ماہر تعلیم اور دانشور ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ کی 10ویں برسی کے مناسبت سے آن لائن ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ بین الاقوامی ادبی سیمینار منعقد ہوا۔ مجلس صدارت میں مظہر الحق صدیقی، پروفیسر فتح محمد ملک اور ڈاکٹر نبی بخش جمانی تھے۔ ڈاکٹر یوسف خشک نے ابتدائیہ پیش کیا۔ ڈاکٹر عبد الغفار سومرو، ڈاکٹر محمد علی مانجھی، انعام اللہ شیخ، محمد عمر چنڈ (نیوزلینڈ)، ایوب بلوچ، ڈاکٹر صوفیہ یوسف، امیمہ بلوچ، ڈاکٹر منظور علی ویسریو اور عاقل علی کاکا نے اظہار خیال کیا۔ نظامت ڈاکٹر حاکم علی برڑو نے کی۔ ڈاکٹر یوسف خشک نے ابتدائیہ پیش کرتے ہوئے کہاکہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نامور محقق، مؤرخ، ماہر تعلیم اور دانشور تھے۔ انھوں نے اپنی علمی اور تحقیقی خدمات کی بناپر عالمگیر شہرت حاصل کی۔ اُن کی علمی و ادبی خدمات کا سرمایہ صرف سندھی زبان تک ہی محدود نہیں بلکہ اُردو، انگریزی، فارسی، بلوچی اور سرائیکی زبانوں تک پھیلاہوا ہے۔ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کا یہ اختصاص ہے کہ انھوں نے علمی اور تحقیقی میدان میں جو کارہائے نمایاں خدمات انجام دیے وہ مثالی ہیں۔ آپ نے سندھ کی تاریخ کے بنیادی ماخذ”فتحنامہ سندھ“ یا”چچ نامہ“،”تاریخ معصومی“اور”تخفۃ الکلام“کے حوالے سے وقیع کام کیا ہے۔ تحقیق کے حوالے سے 5جلدوں پر مشتمل جامع سندھی لغات بھی ان کا بڑا کارنامہ ہے۔ اس کے علاوہ ”سندھی میں اردو شاعری“، ”مولاناآزاد سبحانی“،”تحریک آزادی کے مقتدر رہنما“اور ”دیوان عالم“اہم تصنیفات ہیں۔ تعلیمی خدمات کے حوالے سے انھوں نے قومی کمیشن برائے تحقیق،تاریخ و ثقافت میں خدمات انجام دیں۔ سندھ یونیورسٹی میں بطور وائس چانسلر اور اولین وائس چانسلر بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اور بانی چیئرمین سندھی لینگویج اتھارٹی خدمات انجام دیں۔ ڈاکٹر یوسف خشک نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کے کام پر مزید تحقیق کی ضرورت ہے تاکہ ہماری نئی نسل ان کی علمی و تحقیقی کام سے آگاہی حاصل کرسکے۔ مظہر الحق صدیقی نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ سندھ کے بہت بڑے مؤرخ، ماہر تعلیم اور دانشور تھے۔ ادب اور ثقافت کے فروغ کے حوالے سے اُن کی خدمات ناقابل فراموش ہیں۔ وہ سندھ کی پہچان ہیں۔ پروفیسر فتح محمد ملک نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ سندھ پاکستان بلکہ برصغیر کے بڑے دانشور تھے انھوں نے اپنی ساری زندگی علم و ادب، تاریخ لسانیات کے فروغ میں گزاری۔ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے کتابوں کی صورت میں ادب و ثقافت کا قیمتی اثاثہ چھوڑا ہے۔ڈاکٹر نبی بخش جمانی نے کہاکہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے تاریخ، ادب و ثقافت اور تحقیق کے میدان میں نمایاں کام کیا ہے جو نئی نسل کے لیے مشعل راہ ہے۔ڈاکٹر عبد الغفار سومرو نے کہا کہ تاریخ کے حوالے سے اُن کا کام بے حد اہمیت کا حامل ہے۔ڈاکٹر محمد علی مانجھی نے کہاکہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے علم و ادب لسانیات لوک ادب اور کلاسیکل شعراء پر بڑا وقیع کا کیا ہے۔ ڈاکٹر انعام اللہ شیخ نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے علم و ادب، ثقافت اور تاریخ سے متعلق تمام شعبوں میں مثالی کام کیا۔محمد عمر چنڈ (نیوزلینڈ) نے ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کی علمی اور ادبی خدمات کا تذکرہ کیا۔ ایوب بلوچ نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے بلوچستان میں علم و ثقافت کے فروغ میں نمایاں کردار ادا کیا۔ قاسم حیدر نے کہا ڈاکٹر نبی بخش بلوچ سندھ کے سب سے بڑے نثرنگار اور دانشور تھے انھوں نے تاریخ، کلچر اور لسانیات پر مثالی کام کیا ہے۔ڈاکٹر صوفیہ یوسف نے کہاکہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ پاکستانی ثقافت اور تہذیب کے آمین تھے۔ محترمہ امیمہ بلوچ صاحبزادی ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے کہا کہ میرے والد عظیم انسان تھے انھوں نے مثالی کام کیا ہے مجھے اُن پر فخر ہے۔ انھوں نے خصوصی طور پر چیئرمین اکادمی کا شکریہ ادا کیا۔ڈاکٹر خضرنوشاہی نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ بہت بڑے عالم اور محقق ہونے کے ساتھ بہت اعلیٰ ظرف انسان بھی تھے۔قاسم حیدر نے کہا کہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ سندھ کے سب سے بڑے نثر نگار اور دانشور تھے انھوں نے تاریخ، کلچر اور لسانیات پر مثالی کام کیا ہے۔ ڈاکٹر منظور علی ویسریو نے کہاکہ وہ ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے۔ انھوں نے لکھنے کو عبادت اور ریاضت سمجھا۔عاقل علی کاکا نے ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کی علمی ادبی اور تحقیقی خدمات پر روشنی ڈالی۔ ڈاکٹر الطاف جو کھیونے ڈاکٹر نبی بخش بلوچ خدمات کوخراج تحسین پیش کیا۔

اکادمی ادبیات پاکستان کےزیراہتمام آن لائن ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ بین الاقوامی ادبی سیمینارمیں ڈاکٹرحاکم علی برڑو، ڈاکٹر یوسف خشک، ڈاکٹرمنظور ویسریواور قاسم حیدر اسٹیج پر بیٹھے ہیں۔


اکادمی ادبیات پاکستان کےزیراہتمام آن لائن ڈاکٹر نبی بخش خان بلوچ بین الاقوامی ادبی سیمینار کے شرکاء

Comments are closed.