گلگت بلتستان، فیصل آباد، تلہ گنگ اور اسلام آباد کے اہل قلم کی چیئرمین اکادمی ڈاکٹر یوسف خشک سے ملاقات

پاکستانی زبانیں قومی وحدت کی علامت ہیں۔ ڈاکٹر یوسف خشک، چیئرمین اکادمی
اسلام آباد(پ۔ر)پاکستانی زبانیں قومی وحدت کی علامت ہیں۔ ان خیالات کا اظہارڈاکٹر یوسف خشک، چیئرمین، اکادمی ادبیات پاکستان نے گلگت بلتستان، فیصل آباد، تلہ گنگ اور اسلام آباد کے اہل قلم کے وفد سے ملاقات میں کیا۔ ملاقات میں پاکستانی زبانوں کے فروغ و دیگر ادبی سرگرمیوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر پاکستانی زبانوں کے اہل قلم نے ادب کے فروغ اور ادبیوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے اکادمی کی کارکردگی کوسراہا اور اپنی طرف سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ انہوں نے چیئرمین اکادمی کو اپنے اپنے علاقوں میں ادبی سرگرمیوں سے آگاہ کیا۔ اس موقع پر چیئرمین اکادمی ڈاکٹر یوسف خشک نے کہاکہ اکادمی پاکستانی زبانوں کے ادب کو فروغ دینے کے لیے ٹھوس بنیادوں پر کام کررہی ہے۔ پاکستانی زبانو ں کا فروغ اور ترقی ہمارا اولین مقصد ہے ۔ پاکستانی زبانیں ایک گلدستے کی مانند ہیں جس میں ہر علاقے کی تہذیب، روایات ، زبان اور مٹی کے رنگ و خوشبو شامل ہیں۔ یہ زبانیں ہماری قومی وحد ت کی علامت ہیں۔ انہوں نے گلگت بلتستان کے اہل قلم کے وفد سے اکادمی ادبیات پاکستان کے تحت بوا جوہر کانفرنس کے انعقاد کے سلسلے میں مشاورت کی نیز اکادمی کے زیر اہتمام بچوں کے ادب پر بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد ، اکادمی کے اشاعتی منصوبوںمعمار ادب ، پاکستانی زبانوں کے تراجم، سہ ماہی ادبیات اورششماہی پاکستانی لٹریچر میں ملک بھر کے پاکستانی زبانوں کے ادیبوں کو مناسب نمائندگی دینے کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ آپ کی قیمی آرا ءاور مشوروں سے ہم اکادمی کو مزید فعال بنا کر اپنے ادبی اہداف حاصل کر سکیں گے۔ملاقات میں گلگت بلتستان سے محمد حسن حسرت،محمد یوسف حسین آبادی،احسان علی دانش، چکوال سے ڈاکٹر یوسف اعوان، فیصل آباد سے شہزاد بیگ، اور اسلام آباد سے علی اکبر عباس اور سلیم اختر شامل تھے۔


Pakistani languages are a symbol of national unity. Dr. Yousuf Khushk, Chairman PAL
Delegation of Writers from Gilgit-Baltistan, Faisalabad, Talagang and Islamabad meet Dr. Yousuf Khushk
Islamabad (P.R) Pakistani languages are a symbol of national unity. These views were expressed by Dr. Yousuf Khushk, Chairman, Pakistan Academy of Letters (PAL)in a meeting with a delegation of writers from Gilgit-Baltistan, Faisalabad, Talagang and Islamabad. The promotion of Pakistani languages and other literary activities were discussed during the meeting. On this occasion, writers of Pakistani languages praised the performance of the PAL in promoting literature and the welfare of writers and assured all possible cooperation from his side.
He briefed the Chairman PAL on literary activities in their respective areas.
On the occasion, Chairman PAL, Dr. Yousuf Khushk said that the PAL is working on a solid foundation for the promotion of literature in Pakistani languages. The promotion and development of Pakistani languages is our first goal.
Pakistani languages are like a bouquet that includes the culture, traditions, language, colors and fragrances of each region. These languages are a symbol of our national unity. He consulted a delegation of writers from Gilgit-Baltistan regarding the organizing of the Bawa Johar Conference under the auspices of PAL and also the convening of an international conference on children’s literature under the auspices of PAL. He reiterated the importance of giving proper representation to Pakistani language writers across the country in the quarterly Adabiyat and bi-annual Pakistani literature.
He said that with your valuable feedback and suggestions, we will be able to achieve our literary goals by making the academy more active.
The meeting was attended by Muhammad Hassan Hasrat, Muhammad Yusuf Hussain Abadi, Ehsan Ali Danish from Gilgit-Baltistan, Dr Yusuf Awan from Chakwal, Shehzad Baig from Faisalabad, and Ali Akbar Abbas and Saleem Akhtar from Islamabad.

Comments are closed.