اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام آن لائن انٹرنیشنل سچل کانفرنس

اسلام آباد (پ۔ر)اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام آن لان انٹرنیشنل سچل سرمست کانفرنس کا افتتاح شفقت محمود، وفاقی وریر تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت اور قومی ورثہ و ثقافت کریں گے۔ صدارت مہتاب اکبر راشدی کریں گی۔ انٹرنیشنل سچل کانفرنس ہفت زبان صوفی شاعر سچل سرمت کے 199ویں عرس کے موقع اکادمی ادبیات پاکستان سے 07 مئی 2020 کو شام 05:00 بجے آن لائن ہوگی۔ سچل کانفرنس صوفیاء کے افکار اور ان کے پیغام امن، اخوت، محبت، بھائی چارے کے فروغ، پاکستان کے سوفٹ امیج کو اجاگر کرنے اورسچل سرمت کو خراج عقدت کے لیے منعقد کی جا رہی ہے۔ کانفرنس میں ڈاکٹر یوسف خشک،چیئرمین اکادمی ابتدائہ پیش کریں گے۔ کانفرنس کا آغاز سچل کے درگاہ سے برا ے راست فقیر ایاز ملاح اور ساتھی کی آواز میں کلام پیش کیا جائے گا۔ انٹرنیشنل سچل کانفرنس سچل شناس ادیبوں اور دانشورں میں ڈنمارک سے نصیر ملک” فکر سچل سرمت اور ڈنمارک“، اسلام آباد سے جبار مرز”سچل سرمست ولی اللہ“، ڈاکٹر عبدالعزیزساحر”سچل سرمست کی شاعری میں وحدت الوجودی عناصر کی جلوہ آرائی“، ڈاکٹر فاخرہ نورین”سچل سر مست کی شاعری میں رومانی پروٹو ٹائپس کا ارتقاءایک مطالعہ“، پنجاب سے ڈاکٹر نبیلا رحمان (لاہور) ”سچل رنگ پنجاب میں“، ڈاکٹر جاوید حسان چانڈیو(بہاول پور)”سرائیکی وسیب وچ سچل سرمست دی پذیرائی“، سید خضر نوشاہی(منڈی بہاءالدین)”سچل کی شاعری پر عطار نیشاپوری کے فکری اثرات“، سندھ سے ڈاکٹر در محمد پٹھان (لاڑکانہ)”سچل کی شاعری کا مطالعہ ان کے وقت کے تناظر میں“، ڈاکٹر فاطمہ حسن(کراچی)”حلاج کا تصور عشق اور سچل“، ڈاکٹر ادل سومرو(سکھر)”سچل سرمت کی فکر میں عالمی ہم آہنگی اور بھائی چارے کا تصور“، تاج جویو(حیدرآباد)”حافظ شیرازی اور آشکار دار راز“، پروفیسر الطاف اثیم(رانی پور)”سچل کی شاعری اپنے دور کی عکاس“، ممتاز بخاری (سکھر) ”سچل سرمت کی شاعری کے جدید سندھی شاعری پر فنی و فکری اثرات “، ڈاکٹر مہرخادم(خیرپور) ”سچل سرمست کی اردو شاعری : اہمیت اور انفرادیت“، امر اقبال(خیرپور)”سچل سرمت کے یہاں ماروی کے بارے میں شاہ لطیف والے اشارے“، خیبر پختونخوا ہ سے ڈاکٹر اباسین یوسفزئی (پشاور)”سچل سرمست، انسانیت کی روایت کا شاعر“ اور بلوچستان سے ڈاکٹر واحد بخش بزدار(کوہ سلیمان) ”سچل سرمست وحدت الوجودی شاعر“ کے موضوعات پر آن لائن مقالات پیش کریں گے۔ نظامت ڈاکٹر حاکم علی برڑو اورڈاکٹر سعدیہ طاہرکریں گی۔

Pakistan Academy of Letters

Press Release

Islamabad (P-R) International Sachal Sarmat Conference being organized by the Pakistan Academy of Letters (PAL). Mahtab Akbar Rashdi will preside over the conference

The International Sachal Conference is being held on the occasion of the 199th Anniversary Sufi Poet Sachal Sarmat will be online on 07 May 2020 at 05:00 pm, from PAL to promote the thoughts of Sufis and their message of peace, love and brotherhood and to highlight the soft image of Pakistan.

Dr. Yousuf Khushk, Chairman of PAL will present the introductory Note. Scholars from all over the country and around the world will present articles on different topics to highlight the thoughts and philosophers of Sufi Poet Sachal Sarmat at the conference. Sachal Poetry will be presented live from the Shrine of Sachal directly in the voice of Faqir Ayaz Mallah and his companions. Dr. Hakim Ali Bardo and Dr. Sadia Tahir will be a moderator of the Seminar.

Scholars of Sachal from all over the century from Islamabad including Jabbar Mirza “Sachal Sarmast Waliullah”, Dr. Abdul Aziz Sahir “Elements of the unity of existence & manifestations in the poetry of Sachal Sarmast”, Dr. Fakhra Noorin “A Study on the evolution of romantic prototypes in Sachal Sarmast’s Poetry”, from Punjab are Dr. Nabila Rehman (Lahore) “Sachal colors in Punjab”, Dr. Javed Hassan Chandio (Bahawalpur) “Acceptance of Sachal Sarmast in Seraiki Waseeb”, Syed Khizer Noshahi (Mandi Bahauddin) “Attar Neshapuri’s intellectual impact on Sachal’s poetry”, from Sindh are Dr. Dar Mohammad Pathan (Larkana) “Study of the poetry of Sachal Sarmat in the context of his time”, Dr. Fatima Hassan (Karachi)”Halaj’s concept of love and Sachal”, Dr. Adil Soomro (Sukkur) “Concept of Global Harmony and Brotherhood of Sachal Sarmast in his thoughts”, Taj Joyo (Hyderabad) “Hafiz Shirazi and conspicuous Secrets”, Prof. Altaf Aseeim (Ranipur) “Sachal’s poetry is a reflection of his time”, Mumtaz Bukhari (Sukkur) “Shah Latif’s allusions about Marvi close to Sachal Sarmast”, Dr. Mehr Khadim (Khairpur) “Sachal Sarmast’s Urdu Poetry: Significance and Uniqueness”, Amr Iqbal (Khairpur) “Technical and intellectual influences of Sachal Sarmat’s poetry on modern Sindhi poetry”, from Khyber Pakhtunkhwa Dr. Abasin Yousafzai (Peshawar) “Sachal Sarmast, the poet of the tradition of humanity”, from Balochistan Dr. Wahid Bakhsh Bazdar (Khoa Sulaiman) “Sachal Sarmast Wahdat Al-Wujud poet” and Naseer Malik from Denmark “Sachal Sarmast thoughts and Denmark” Will present online articles on topics.

Comments are closed.