پاکستان میں بولی جانے والی 72زبانوں میں ادب اور لوک ادب کو اکادمی ادبیات پاکستان ایک اینتھالوجی کی صورت میں شائع کرے گا

اسلام آباد (پ۔ ر)پاکستان میں بولی جانے والی 72زبانوں میں ادب اور لوک ادب کو اکادمی ادبیات پاکستان ایک اینتھالوجی کی صورت میں شائع کرے گا ۔ کتابوں کی ڈیجیٹلائزیشن کے لیے حکمت عملی اپنائی جائے گی۔ یہ بات اکادمی ادبیات پاکستان کے چیئرمین ڈاکٹر یوسف خشک نے اکادمی میں آنے کے بعد افسران کی بریفنگ میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ اکادمی ادبیا ت پاکستان کے مقاصد کو صحیح سمت میں آگے بڑھایا جائے جس کے لیے ہمیں فوری اقدامات کرنے ہوں گے۔ پاکستانی زبا ن و ادب کی ترویج اکادمی کے اہم مقاصد میں سے ایک ہے، اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے 72زبانوں کی اینتھالوجی پر فوری کام شروع کیا جائے گا،اس سے پاکستانی ثقافت کے تمام رنگ ادب کے ذریعے نمایاں ہوں گے۔ بہت سی زبانوں کے بولنے والے کم ہوتے جارہے ہیں ہمیں اس طرف توجہ دینی ہوگی کہ اس کے ادب کو محفوظ کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں پاکستانی ادب کی رسائی کے لےے کتابوں کو ڈیجیٹلائز کیا جائے گا تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس سے استفادہ کر سکیں ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور دیگر ممالک کے درمیان ادبی روابط کو بھی فروغ دیا جائے گا اور مختلف ممالک سے وفود کے تبادلہ اور تراجم کے حوالے سے پیش رفت کی جائے گی۔ بریفنگ میں افسران نے شعبوں کی کارکردگی کے حوالے سے چیئرمین کو بریفنگ دی۔

Comments are closed.