غازی سیال کے انتقال پر اکادمی ادبیات پاکستان کی تعزیت

اسلام آباد (پ ر)اکادمی ادبیات پاکستان کے چیئرمین ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے پشتو کے مایہ ناز ادیب اور صدارتی ایوارڈ یافتہ محقق، دانشور اور ناول نگار غازی سیال کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم پشتو شعراءمیں ایک اہم مقام رکھتے ہیں۔انہو ں نے کہا کہ وہ درجن سے زائد کتابوں کے مصنف تھے جس پر 2005 میں مرحوم کو صدارتی ایوارڈ برائے حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔ غازی سیال کو اس کے علاوہ کئی بڑے ایوارڈ مل چکے ہیں۔ پشتو ادب میں ان کو بابائے سندرہ کا لقب دیا گیا تھا۔ مرحوم کی ادبی خدمات کو نہ صرف خیبر پختونخوا بلکہ افغانستان میں بھی قدر کی سے نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ ان کی کتابیں پشتو ادب کے لیے گراں قدر سرمایہ ہیں۔ چیئرمین اکادمی، ڈاکٹر انعام الحق جاویدنے مرحوم کے لےے مغفرت اور لواحقین کےلیے صبر جمیل کی دعا کی۔

Comments are closed.